ہوم / 2018 / جولائی

Monthly Archives: جولائی 2018

کچھ تمہارے بھی دھیان پڑتی ہے؟ ۔۔۔۔رائے سکندر حیات بھٹی، ایڈوکیٹ

اساتذہ میں سے کسی کا شعر ہے زیادہ امکان ہے کہ میر درد کا ہو گا کہ،  آخر الامر آہ، کیا ہو گا کچھ تمہارے بھی دھیان پڑتی ہے قانون کے طالبعلم ہونے کے ناطے اور لوئر کورٹس سے لے کر ہائیکورٹ تک مقدمات اور معاملات کو دیکھتے بھی کافی

مزید پڑھیے

اس ووٹ کو ہر گز عزت نہ دیں۔۔۔۔۔۔اصغر علی بھٹی

اس جمعہ کی شام جب پاکستان کے نااہل وزیر اعظم صاحب کا طیارہ لاہور ائیرپورٹ پر لینڈ کرنے کے بعد ٹیکسی کرتا ہوا حج ٹرمینل کی طرف بڑھ رہا تھا اس وقت طیارے میں موجود مسلم لیگی جیالے پورے زور و شورسے نعرے لگا رہے تھے کہ ووٹ کو عزت

مزید پڑھیے

خلائی مخلوق، آئی ایس پی آر، اور زمینی حقائق۔۔۔۔۔۔۔۔۔طاہر احمد بھٹی

اس لفظ کو سنتے اور اس کے کچ پنے کو برداشت کرتے کافی دن ہو چکے تھے اور طبیعت اس کو طرح دینے پر ہی مائل تھی۔ مگر آئی ایس پی آر کی حالیہ پریس کانفرنس اور اس سے قبل اور بعد سوشل میڈیاء پر منافقانہ اصلاح پسندی، جمہوریت نوازی

مزید پڑھیے

فلاحی مملکت کے قیام میں سمارٹ فونز رکاوٹ ہیں۔۔۔۔۔چوہدری نعیم احمد باجوہ

کچھ دنوں سے ویڈیوز سامنے آرہی ہیں۔ عوام کی طرف تشریف لے جانے والے انتخابی امیدواروں سے لوگ سوالات پوچھ رہے ہیں ۔ کچھ کی تو دوڑیں لگو ارہے ہیں ۔ لیکن چشم فلک ایسے نظارے کیوں دیکھ رہی ہے ۔اس بار تو وطن عزیز میں بڑے مقدس انتخابات منعقد

مزید پڑھیے

ڈاکٹر وزیر آغا سے ایک تنقیدی نشست۔۔۔۔۔۔۔ڈاکٹر ستیہ پال آنند

میں جب بھی لاہور جاتا، ڈاکٹر وزیر آغا کے دولت کدے پر ہی ٹھہرتا۔ اوپر والی منزل پر ایک طویل و عریض کمرہ اور غسل خانہ میری عارضی املاک تھے۔ شام تک تو احباب (جن میں ڈاکٹر انور سدید اور شاہد شیدائی سرِ فہرست تھے) بیٹھے رہتے اور ہم دنیا

مزید پڑھیے

Send this to friend