ہوم / مہمان کالم

مہمان کالم

کچھ تمہارے بھی دھیان پڑتی ہے؟ ۔۔۔۔رائے سکندر حیات بھٹی، ایڈوکیٹ

اساتذہ میں سے کسی کا شعر ہے زیادہ امکان ہے کہ میر درد کا ہو گا کہ،  آخر الامر آہ، کیا ہو گا کچھ تمہارے بھی دھیان پڑتی ہے قانون کے طالبعلم ہونے کے ناطے اور لوئر کورٹس سے لے کر ہائیکورٹ تک مقدمات اور معاملات کو دیکھتے بھی کافی

مزید پڑھیے

محراب پور، گوٹھ "نوّں پوترا” کے مکینوں کا یادگار کردار، از قلم محمد دین، مسافر ٹرین

محراب پور کے قریب گوٹھ "نوّں پوترا” کے مکینوں کا یادگار کردار شالیمار ایکسپریس کراچی سے لاہور جاتے ہوئ محراب پور سے چند کلو میٹر آگے ایک بڑے حادثہ سے بال بال بچی. الحمدوللّہ’  ٹرین جبکہ تیز رفتاری سے سفر کر رہی تھی تو اکانومی کلاس کی ایک بوگی کے

مزید پڑھیے

عدلیہ کا وقار ہر سطح پر ملحوظ رکھنا چاہئے۔۔۔۔۔۔سکندر حیات بھٹی، ایڈوکیٹ

آئین پاکستان کا کوئی آرٹیکل اور سپریم کورٹ کا کوئی رول آف بزنس جناب چیف جسٹس آف پاکستان کو ایسا کوئی اختیار نہیں دیتا کہ وہ کسی عدالت کی اس وقت انسپکشن کریں جب عدالت لگی ہوئی ہو ۔۔۔۔آئین پاکستان کے تحت ہر چھوٹی بڑی عدالت کی حرمت برابر ہوتی

مزید پڑھیے

راہگیر کے قلم سے، ایک نیا سلسلہ اشاعت۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔راہگیر

"راہگیر کے قلم سے” ایک مستقل سلسلہ اشاعت تھا جو ہفت روزہ "لاہور” میں تواتر سے لکھا جاتا تھا ۔ پچاس کی دہائی کے بعد شروع ہونے والے اس سلسلہ اشاعت کے قارئین کی ہم آخری نسل تھے کہ قبلہ ٹاقب زیروی صاحب مرحوم کے بعد لاہور اور یہ کالم

مزید پڑھیے

دین اور مذہب کی لفظی بازیگری پر علمی استدلال۔۔۔۔۔۔جمشید اقبال

آج کوئی پچیس برس بعد غلا احمد پرویز کی انگریزی کتاب ’اسلام اے چیلنج ٹو ریلیجن‘ پڑھی تو حیرت ہوئی کہ کسی دور میں یہ کتاب مجھے بے حد پسند رہی ہے اور کسی سنجیدہ  پر شاید میرے زیر ِ مطالعہ رہنے والی پہلی انگریزی نان فکشن کتاب تھی ۔

مزید پڑھیے

ہے کوئی رجل رشید۔۔۔۔۔۔۔۔؟ واحد اللہ جاوید

از واحد اللہ جاوید

قوم نوح پر عذاب کب مقدر ہوا تھا؟ جب سرداران نے عوام الناس کو اس قدر گمراہ کردیا کہ آنے والی نسل بھی انکی غلیظ سوچ کی غلام رہے۔ پاکستانی عوام کو بھی ایسی صورتحال کی طرف دھکیلا جارہا ہے۔ پاکستانی عوام کو بھیڑ بکریاں کہنے سے آپ بری الذمہ

مزید پڑھیے

پہنچی وہیں پہ خاک۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔اورنگزیب ظفر خان

شبنم ایک خوبصورت بنگالی اداکارہ تھی۔ ملک ٹوٹنے کے بعد پاکستان میں رہنا پسند کیا۔ ضیاء الحق کے زمانے میں فاروق بندیال اور اس کے تین ساتھیوں نے شبنم کے شوہر اور بیٹے کو رسیوں سے باندھ کر انکی آنکھوں کے سامنے گینگ ریپ کیا۔ کیس ثابت ہوا اور مجرموں

مزید پڑھیے

سیالکوٹ مسجد حملہ پر ایک عام احمدی کا رد عمل۔۔۔۔۔۔۔راشد احمد

سیالکوٹ میں ایک سو سال سے قائم جماعت احمدیہ کی ’’مسجد‘‘ جسے معتدل اسلامسٹ حضرات بھی عبادت گاہ ہی لکھ کر کنی کترا رہے ہیں،کو مولویوں نے مسمار کردیا ہے۔یہ پہلی دفعہ بھی نہیں اور یہ آخری دفعہ بھی نہیں۔جب تک غلط کھڑی کی گئی بنیادیں قائم ہیں یہ بیہودگیاں

مزید پڑھیے

سیالکوٹ شہر میں احمدیہ مسجد اور ملحقہ مکان پر حملہ۔۔۔۔۔۔۔۔اداریہ

آج رات سوا بارہ بجے سینکڑوں افراد نے سیالکوٹ شہر میں جماعت احمدیہ کی قدیمی مسجد اور اس سے ملحقہ مکان پر حملہ کر کے مسمار کر دیا۔ شہری انتظامیہ ، پولیس کے ضلعی افسران اور میڈیا کے نمائندگان موقع پر موجود تھے جبکہ انتہا پسند مذہبی جماعتوں کے انگیخت

مزید پڑھیے

Send this to friend