ہوم / زبان و ادب (page 2)

زبان و ادب

ادب پہلا قرینہ ہے محبت کے قرینوں میں

پنجابی بولیاں۔۔۔۔۔۔۔مراسلہ و انتخاب از، ایوب کموکا

تینوں کوٹھے اتے چڑھ کے ویہندا جے چھت میرا بھار جھَلدی اساں اکھیاں نوں بھر لے تروپے پتناں توں یار ٹورکے کدی تیل وچ تلے نی پکوڑے وچھوڑیاں دی گل کرنائیں جدوں مٹی دیاں روٹیاں پکائیاں تے بالاں میرے پیر پَھدھ لے پُٹھا ٹنگ کے تے میرے کولوں پچھدائے توں

مزید پڑھیے

پنجابی غزل۔۔۔۔۔۔۔۔۔ایوب کموکا

ایویں تے نہیں سنگتاں پھُٹن لگ پیۤاں دل دے اندر غرضاں پھُٹن لگ پیۤاں سینے دیوچ سورج اگیا ہویا سی ساہواں وچوں کرناں پھُٹن لگ پیۤاں ہک دن اوہدے ویکھن کان دعا منگی تَلیاں وچوں اکھاں پھُٹن لگ پیۤاں خورے کنھے بی سُٹیا اے نفرت دا دھرتی وچوں جنگاں پھُٹن

مزید پڑھیے

غزل۔۔۔۔۔۔۔۔ از ، صائمہ امینہ شاہ

جدا ہوکر بہت رویا گیا ہے محبت میں سبھی کھویا گیا ہے میری آنکھیں بھی جیسے لے گیا وہ نہ آئی نیند ، ناں سویا گیا ہے نہیں ہے اب کوئی بھی داغ اس پر یہ دل اشکوں سے یوں دھویا گیا ہے بڑی زرخیز ہے یہ کشت الفت یہاں

مزید پڑھیے

غزل۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔صائمہ شاہ

چہرہ تراش لانے سے پہلے کی بات ہے آئینہ ٹوٹ جانے سے پہلے کی بات ہے فصل بہار آنے سے پہلے کی بات ہے یہ تیرے مسکرانے سے پہلے کی بات ہے آتی نہ تھی کبھی مرے لفظوں میں روشنی اپنا لکھا مٹانے سے پہلے کی بات ہے اک مضمحل

مزید پڑھیے

ڈاکٹر وزیر آغا سے ایک تنقیدی نشست۔۔۔۔۔۔۔ڈاکٹر ستیہ پال آنند

میں جب بھی لاہور جاتا، ڈاکٹر وزیر آغا کے دولت کدے پر ہی ٹھہرتا۔ اوپر والی منزل پر ایک طویل و عریض کمرہ اور غسل خانہ میری عارضی املاک تھے۔ شام تک تو احباب (جن میں ڈاکٹر انور سدید اور شاہد شیدائی سرِ فہرست تھے) بیٹھے رہتے اور ہم دنیا

مزید پڑھیے

غزل۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔صائمہ شاہ

دیے کو پھونک ماری جا رہی ہے شبِ فرقت گزاری جا رہی ہے تمہارا راستہ ہے جس جگہ پر وہیں منزل ہماری جا رہی ہے تمہاری آنکھ میں دیکھا ہے خود کو تو کیا قسمت سنواری جا رہی ہے؟ یہ کس حسرت کے پیچھے لے کے مجھ کو مری بے

مزید پڑھیے

سیکرٹری خارجہ ریاض محمد خان سے ملاقات کا فسانہ۔۔۔۔۔علی اکبر ناطق

یہ 2011 کا قصہ ہے۔ اُن دنوں مَیں مقتدرہ قومی زبان اسلام آباد میں 10 گریڈ کا کلرک تھا ۔ افتخار عارف صاحب وہاں سے ایران جا چکے تھے اور ڈاکٹر انوار احمد صاحب بطور چئرمین آ چکے تھے ۔ اور حالات اُن سے میرے دَگڑ مگڑ ہو چکے تھے

مزید پڑھیے

جنرل اسد درانی سے ملاقات کا قصہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔علی اکبر ناطق

یہ 2015 کی بات ہے ، مَیں اسلام آباد میں تھا ۔ ایک دن کسی کا فون آیا ، مَیں نے کال لی تو ایک بوڑھے آدمی کی آواز سنائی دی ، آپ علی اکبر ناطق ہیں ؟ مَیں کہا جی ہاں وہی ہوں ، فرمایے ، اُس نے کہا

مزید پڑھیے

ایک چھوٹے کی بڑی باتیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔سعدیہ تسنیم سحر، جرمنی

گاڑی نے ایک ہچکی لی اور ڈیڈ ……..میں نے ایک دو دفعہ پھر اسے سٹارٹ کرنے کی کوشش کی تو ایک شرمایا شرمایا سا کھر ……کھر …….کر کے چپ کر گئی۔ "آج کا سارا دن ہی بکواس گزرا ۔باس کی شوگر کوٹیڈ طعنے اور گالیاں برفی سمجھ کر کھائیں اور

مزید پڑھیے

منظوم تبصرہ۔۔۔۔۔۔۔از ارشاد عرشی ملک

وہ جو لبرل ہیں ……… ارشاد عرؔشی ملک وہ جو لبرل ہیں ،بچا کر کھال کو کرتے ہیں بات اُن کی بھی اپنی حدیں ہیں ،اپنی طرزِ احتیاط ڈھیلا ڈھالا تبصرہ کرتے ہیں ،ظلم و جبر پر کس طرح جانے دیں ،اپنے ہاتھ سے راہِ نجات معذرت خواہی تو ہے

مزید پڑھیے

Send this to friend