ہوم / حقوق/جدوجہد / راہگیر کے قلم سے، ایک نیا سلسلہ اشاعت۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔راہگیر

راہگیر کے قلم سے، ایک نیا سلسلہ اشاعت۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔راہگیر

"راہگیر کے قلم سے” ایک مستقل سلسلہ اشاعت تھا جو ہفت روزہ "لاہور” میں تواتر سے لکھا جاتا تھا ۔
پچاس کی دہائی کے بعد شروع ہونے والے اس سلسلہ اشاعت کے قارئین کی ہم آخری نسل تھے کہ قبلہ ٹاقب زیروی صاحب مرحوم کے بعد لاہور اور یہ کالم نما شذرات بھی چل بسے۔
گویا یوں کہ،
اک دھوپ تھی جو ساتھ گئی آفتاب کے۔
ہم نے اس سلسلے کو دوبارہ آئینہ ابصار میں شروع کیا ہے اور قارئین آئینہ ابصار کے لئے ہماری طرف سے عید مبارک کے ساتھ یہ عید الفطر کا تحفہ ہے۔
اس میں روزمرہ مسائل و واقعات، سادہ اور روزمرہ زبان و اسلوب کے ساتھ پیش کئے جا سکیں گے اور مزید یہ کہ اگر کوئی توجہ طلب مسئلہ ہو تو وہ بھی اس فورم پر زیر گفتگو لایا جا سکے گا۔
ہر امید افزاء بات، کوئی سا بھی با معنی مکالمہ، دنیا بھر سے کوئی نئی بات، کوئی منہ پھیر کے جاتی ہوئی یاد یا پھر دل مسلنے والا کوئی احساس، غرض کوئی بھی ایسی مختصر یا طویل بات جو اظہار کا تقاضا کرے اور سماعتوں اور بصارتوں کی طلبگار ہو تو اس کے لئے یہ فورم حاضر ہے۔
اسی طرح علمی ادبی یا سیاسی و سماجی موضوعات سے متعلق کوئی سی بات جس کی اشاعت افادہ عام کا وصف رکھتی ہو اس کے لئے بھی یہ صفحات حاضر ہیں۔
یعنی،
صلائے عام ہے یاران نکتہ داں کے لئے۔۔۔۔۔
شعبہ ہائے تعلیم، صحت، یا سماجی بہبود کے مسائل اور وسائل کی دستیابی یا عدم دستیابی پر بھی اسی عنوان کے تحت گفتگو ہو سکتی ہے اور انسانی حقوق یا آزادی اظہار بارے بھی یہاں مکالمہ ممکن ہوگا۔

قارئین و احباب سے اس نئے سلسلہ اشاعت کی کامیابی کے لئے درخواست دعا کے ساتھ۔

راہ رو راہ محبت کا خدا حافظ ہے

اس میں دو چار بڑے سخت مقام آتے ہیں

فقط۔۔۔
راہگیر۔۔۔۔۔۔اٹھارہ جون، سن دو ہزار اٹھارہ

مصنف طاہر بھٹی

Check Also

، از قلم، ایوب کموکا ، ساڈی فیر چپ جے۔۔۔۔۔۔لیو ٹالسٹائی دے مضمون دا پنجابی ترجمہ

ساڈی تے فر چپ اے جی۔۔۔ خالدقیوم تنولی بھائی دے شکریے نال ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ لیو ٹالسٹائی

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Send this to friend