غزل۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔طاہر احمد بھٹی

غزل۔۔۔۔۔۔۔۔

دل کی حالتوں پہ اب گفتگو اضافی ہے
ہو بہ ہو کے قضئیے میں، من و تو اضافی ہے

دید کا تقاضا ہے، دل کا دم بخود ہونا
رو برو کے لمحوں میں، ہاوء ہو اضافی ہے

ان کی دلنوازی پر بات آئے گی ورنہ
دل کے آئینے میں وہ شیشہ رو اضافی ہے

دلگداز لمحوں کی بات دل بدل ہو گی
ہم سخن ہیں تو اور میں، کو بکو اضافی ہے

محو ہو گئے تجھ میں، اب تلاش لا حاصل
تجھ سے مل چکے ہیں ہم، جستجو اضافی ہے

(طاہر احمد بھٹی، 7 اکتوبر 2018)

اپنا تبصرہ بھیجیں