Food for thought, by: Marya Irem

A matter between man and Allah, by Waseem Altaf

The inevitable medium, by Marya Irem

Whatsapp Groups……..by Waseem Altaf

Colosseum Turns Red ; by Waseem Altaf

Asma is dead…..long live Asma!….by Adnan Rehmat

From Sir Sayed To Iqbal, by ; Dr. Satyapal Anand

Women Lawer Forum seeking equality, Editorial

Loud Thinking…………Hamza Rao

Poem………by Khola Ahmad

Poem ……by Saira A. Nizami

Joota…….by Waseem Altaf

Recent Posts

آئینے پریشاں ہیں، اب نگارخانے میں۔۔۔۔۔۔غزل، ،۔۔صائمہ شاہ

بے کلی سی رہتی ہے دل کے چار خانے میں اتنی دیر کیوں کر دی زندگی میں آنے میں؟ دوریوں نے جسم و جاں لخت لخت کر ڈالے زندگی لگانی ہے ، اب قریب آنے میں مستقل مزاجی سے کیجئے ستم، جاناں آپ بھی مزہ لیجے، میرا دل جلانے میں

مزید پڑھیے

خواب اس آنکھ میں بھریں کیسے۔۔۔۔!غزل۔۔۔۔۔۔طاہر احمد بھٹی

خواب اس آنکھ میں بھریں کیسے۔۔۔۔!غزل۔۔۔۔۔۔طاہر احمد بھٹی دیپ کچھ تھے ، مگر جلے ہی نہیں دید کے سلسلے ، چلے ہی نہیں کیسی قوس قزح ہے آنکھوں میں ہم تو اس شوخ سے ملے ہی نہیں آئینے دم بخود تحیر میں۔۔۔! شیشہ رو کے یہ مسئلے ہی نہیں چشم

مزید پڑھیے

، از قلم، ایوب کموکا ، ساڈی فیر چپ جے۔۔۔۔۔۔لیو ٹالسٹائی دے مضمون دا پنجابی ترجمہ

ساڈی تے فر چپ اے جی۔۔۔ خالدقیوم تنولی بھائی دے شکریے نال ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ لیو ٹالسٹائی دا اعتراف۔۔ جنگ توں بعد میں سینٹ پیٹرز برگ واپس آگیا تے ادیباں تے شاعراں دی صحبت وچ اٹھن بیٹھن لگ پیا۔اوہناں نے مینوں اپنے جیہا سمجھ کے قبول کر لیا تے میری خوشامد کرن

مزید پڑھیے

Send this to friend